Na Tera Bhai Raha Na Mera Bhai Raha Lyrics | Syed Raza Abbas Zaidi | 2020

Na Tera Bhai Raha Na Mera Bhai Raha Lyrics Syed Raza Abbas Zaidi 2020 – Syed Raza Abbas Zaidi Lyrics

Noha Khwan: Syed Raza Abbas Zaidi

جب سنا صغرا نے لوٹ آیا وطن میں قافلہ
ھائے جب پہنچیں تو منظر دیکھکر روکر کہا
اےپھوپی اماں بھرا تھابھائیوں سےگھر میرا
کیا ھوا کربوبلا میں کچھ تو بتلائیں زرا

ھائے روتے ھوئے زینبؑ نے کہا اے صغرا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

باپ جیتا بھی تو کسطرح سے یہ غم سہکے
بھائی کو پیار ھی اتنا تھا علیؑ اکبرؑ سے
جس گھڑی سینہِ اکبرؑ سے سناں کو کھیچا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

ھائے جس مشک میں اصغرؑ کے لئے تھا پانی
ہاں اُسی مشک میں سانسیں تھی میرےغازیؑ کی
نہر پر مشک پہ جب تیر لگا پانی بہا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

ساتھ عباسؑ تھے اکبرؑ تھے بڑی ڈھارس تھی
کس میں جرت تھی نظر ھم پہ اُٹھاتا کوئی
تھا یہی ایک سبب ھم جو ھوئے بےپردہ
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

کیسے بتلاؤں ستم اُس نے اُٹھائے کتنے
شمر نے دُرّے سکینہؑ کو لگائے کتنے
کھا گیا شام کے زنداں میں اُسے یہ صدمہ
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

یہ تو اچھا ھی ھوا تم نا گئی کربوبلا
تم سے دیکھاھی نہیں جاتا جو میں نے دیکھا
سینہ اکبرؑ کا چھدا کٹ گیا سرورؑ کا گلا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

میری ان آنکھوں کی ٹھنڈک تومیرےبھائی تھے
میں نے ان آنکھوں سے دیکھا ھے اُنہیں مرتے ھوئے
کیسے زندہ ھوں میں اب تک یہ مجھے صغراؑ بتا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

بس تیرے واسطے آئی ھے مدینے زینبؑ
ورنہ مقصد میرے جینے کا نہیں کوئی بھی اب
ھائے اب کون سہارا ھے میرے جینے کا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا

فاطمہ بنتِ حسنؑ سے یہ کہا کچھ بول
بھیا قاسمؑ بھی نہیں آتے نظر کیوں مجھکو
فاطمہؑ بنتِ حسنؑ کہنے لگیں اے صغراؑ
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

کیسی بہنوں پہ جدائی یہ قیامت لائی
ساری بہنوں کی صداؤں میں تھا بھائی بھائی
سنکے زیشان و رضا رویا مدینہ سارا
نا تیرا بھائی رھا نا ھی میرا بھائی رھا

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top